151

اسلام آباد اور ملحقہ علاقوں میں ’شُوں شُوں‘ کرتی تیز ہوا کا معاملہ کیا ہے؟

اکستان کے میدانی علاقوں میں فروری سے ہی گرمی کی دستک سنائی دینے لگتی ہے تاہم دارالحکومت اسلام آباد اور اس سے ملحق علاقوں کے مکینوں نے مارچ کے اختتامی دنوں میں بھی دھوپ کی تپش چکھ لی۔
تیز دھوپ نے اسلام آباد اور گردونواح میں پنکھے اور ایئرکنڈیشنرز کو حرکت دی ہی تھی کہ 31 مارچ اور یکم اپریل کی درمیانی شب سے تیز ہواؤں نے موسم کی حدت تو قدرے کم کی لیکن جلد کی خشکی، ناک سے خون بہنے اور صبح و شام کے اوقات میں برفیلی ہواؤں جیسی ٹھنڈ پیدا کر دی۔

گھنے اور بڑے درختوں کے قریب رہنے والوں نے ہوا کی سائیں سائیں سنی، نسبتا کھلے سرسبز علاقوں کے مکین ساکت رہنے والے اردگرد کے منظر میں تیز حرکت دیکھ کر موسم کی کروٹ سے باخبر ہوئے ایسے میں گنجان آباد علاقوں کے مکینوں کو نہ چاہ کر بھی دروازوں کے بجنے اور کھڑکیوں کے کھڑکنے سے یہ اطلاع مل ہی گئی کہ اچانک کچھ نیا ہوا ہے۔

ذریعہ: اردو نیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں