353

سعودی عرب نے 04 ممالک کی خواتین سے شادی کرنے پر پابندی عائد کردی

سعودی عرب نے اپنے مرد شہریوں کو پاکستان ، بنگلہ دیش ، چاڈ اور میانمار کی خواتین سے شادی کرنے پر روک لگا دی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب نے اپنے مرد شہریوں کو پاکستان ، بنگلہ دیش ، چاڈ اور میانمار کی خواتین سے شادی کرنے پر روک لگا دی ہے۔ سعودی عرب کے نئے قوانین کے مطابق اگر درخواست دہندہ پہلے سے شادی شدہ ہے تو اس کو ہسپتال سے ایک رپورٹ لینا ہوگی جو یہ ثابت کرے کہ اس کی اہلیہ معذور، پرانی بیماری سے متاثر یا بانجھ پن کا شکار تو نہیں۔ غیرسرکاری اعداد و شمار کے مطابق سعودی عرب میں فی الحال ان چار ممالک کی 50 ہزار خواتین مقیم ہیں۔ مکہ پولیس کے ڈائریکٹر میجر جنرل آصف القریشی کے حوالے سے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ غیر ملکیوں سے شادی کرنے کی خواہش رکھنے والے سعودی مردوں کو اب سخت قوانین کا سامنا کرنا پڑے گا۔

رپورٹ کے مطابق یہ قدم اس لئے اٹھایا گیا ہے تاکہ سعودی مردوں کو غیر ملکیوں سے شادی کرنے سے روکا جاسکے۔ اس کے ساتھ ہی غیر ملکیوں کے ساتھ شادی کی اجازت دینے سے پہلے اضافی قوانین بنائے گئے ہیں۔ قریشی نے کہا کہ غیر ملکی خواتین سے شادی کرنے کی خواہش رکھنے والوں کو پہلے حکومت سے منظوری لینا ہوگی ساتھ ہی شادی کرنے کیلئے درخواست دینی ہوگی۔قریشی نے کہا کہ طلاق شدہ مردوں کو طلاق کے چھ مہینے کے اندر درخواست داخل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ درخواست دہندہ کی عمر 25 سال سے زیادہ ہونی چاہئے۔

دوسری جانب ایک رپورٹ کے مطابق شادی کے خواہاں سعودی شہریوں سے پولیس درخواست وصول کرے گی اور ان کو منظوری کے لئے گورنری کو بھیج دے گی جبکہ درخواست دہندہ اپنی درخواست کے ساتھ تمام شناختی دستاویزات منسلک کرنے کا پابند ہو گا۔

متعلقہ دستاویزات مقامی ضلعی مئیر کے دستخط کے ساتھ منظور شدہ ہونے چاہیں نیز درخواست دہندہ کو اپنے خاندان کے کارڈ کی کاپی بھی منسلک کرنا ہوگی۔

ذرائع: گلف نیوز ۔ کویت اردو نیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں