456

عید الفطر کے بعد کویت سے اچھی خبریں ملنے کی امید

کویت: عید الفطر کے بعد معمول کی زندگی میں واپس آنے کے “مثبت” فیصلے متوقع

تفصیلات کے مطابق اعلی سطح پر کورونا وائرس کے یومیہ اعداد و شمار کے باوجود کویت اس وبا کا سامنا کرنے کے سلسلے میں بڑی پیشرفت حاصل کرنے کے قریب ہے جبکہ اگلے چند دنوں میں ایک ملین ویکسی نیشن خوراکوں تک پہنچ جائے گا جو عید کے بعد “مثبت” فیصلوں کا راستہ ہموار کرنے میں مددگار ثابت ہو گا۔

باخبر ذرائع نے روزنامہ الرای کو بتایا کہ “اہم فیصلے جلد جاری کیے جانے کا امکان ہے۔” تاہم انہوں نے اپنی نوعیت یا خصوصیات کا انکشاف نہیں کیا صرف یہ کہا کہ وہ “ایسے مثبت فیصلے ہیں جو وبائی امراض کے مقابلہ میں ایک تبدیلی کا رخ کریں گے اور معمول کی زندگی میں بتدریج واپسی کا آغاز کریں گے۔ وزارت صحت نے اس کے بارے میں سفارشات پیش کیں جبکہ عید الفطر کے بعد حکومت کے ذریعہ ان کا اعلان کردیا جائے گا۔

ویکسی نیشن لینے والوں کی تعداد 900،000 سے تجاوز کرنے کے بعد ذرائع نے انکشاف کیا کہ اینٹی “کوویڈ 19” ویکسین وصول کرنے والے شہریوں اور رہائشیوں کی تعداد “ایک ملین تک پہنچ جائے گی” اور توقع کی جا رہی ہے کہ یہ تعداد اگلے ہفتے کے آغاز سے تجاوز کر جائے گی۔

وبائی امراض کی صورتحال کے اشارے کے بارے میں ذرائع کے مطابق ان اعدادوشمار سے پتہ چلتا ہے کہ آبادی کی کثافت کے حساب و کتاب سے الجہرہ اور دارالحکومت کے گورنریٹس کے مقابلے میں حولی ، الاحمدی اور الفروانیہ کے گورنریٹس میں پچھلے کچھ عرصے کے دوران انفیکشن کے سب سے زیادہ ریکارڈ ہونے والے واقعات ہیں۔

ایک متعلقہ سیاق و سباق میں کورونا وائرس برائے سپریم ایڈوائزری کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر خالد الجاراللہ نے اعلان کیا ہے کہ سرمایہ کاری کے رہائشی علاقوں میں انفیکشن بڑھتا جارہا ہے اور یہ نشاندہی کی ہے کہ وائرس سے متاثرہ اور اسپتال میں داخل ہونے والے غیرملکیوں کی تعداد رواں ماہ کے دوران شہریوں کے مقابلے میں زیادہ ہے۔

ویکسی نیشن کروانے والے افراد کے ہسپتالوں میں داخلوں، اہم واقعات اور اموات کی تعداد کو نوٹ کرتے ہوئے الجاراللہ نے ویکسی نیشن نہ لگوانے والے شہریوں اور تارکین وطن کے درمیان اسپتال میں داخل ہونے اور اہم معاملات میں اضافے پر زور دیا۔

ذرائع:الرای ۔ کویت اردو نیوز 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں