90

بھارت نے اپنا ہی ریکارڈ توڑ دیا، ایک دن میں 3,32,000 کورونا کیس ریکارڈ

بھارت میں کورونا کیس لگاتار بڑھنے لگے، ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کا بھارت پر دباؤ

بھارت کو کورونا کو محدود کرنے کے لیے نقل و حرکت اور بھیڑ و میل جول پر پابندی عائد کرنا چاہیے: عالمی تنظیم صحت

تفصیلات کے مطابق ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ کے ڈائریکٹر مائیک ریان نے آج جمعہ کو کہا کہ بھارت کو ابھرتے ہوئے کورونا وائرس سے انفیکشن کے معاملات میں تیزی سے اضافے کو کم کرنے کے لئے نقل و حرکت اور بھیڑ بھاڑ پر پابندیاں عائد کرنی چاہیں۔

انہوں نے ہندوستان میں اس بیماری کے پھیلاؤ پر قابو پانے کو “ایک بہت ہی مشکل کام” کے طور پر بیان کیا۔ انہوں نے کہا کہ “ہمیں انفیکشن کو کم کرنے کے لئے زیادہ سے زیادہ اختلاط کو کم کرنا ہوگا جبکہ ہندوستانی حکومت ایسے اقدامات اٹھانے پر غور کررہی ہے۔ “

دوسری جانب بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعہ کو کہا کہ کوویڈ 19 کا مقابلہ کرنے کے لیے میڈیکل آکسیجن اور دواؤں کی کمی کا سامنا کرنے والی متعدد ریاستوں کے درمیان آکسیجن ٹینکروں کے لئے نقل و حمل کا وقت کم کرنے کے لئے ریلوے اور ایئر فورس کو تعینات کیا جارہا ہے اور تمام ریاستی حکومتوں کو اس کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔

بھارت میں آج دوسرے دن جمعہ کے روز کورونا سے اموات کی سب سے زیادہ تعداد ریکارڈ کی گئی کیونکہ ایسے وقت میں جب صحت کی دیکھ بھال کا نظام مریضوں کی تعداد، اموات اور آکسیجن کی کمی سے دوچار ہے نئے انفیکشن کی تعداد 330،000 سے تجاوز کرچکی ہے۔

آج بروز جمعہ کو وزارت صحت کے اعداد و شمار میں جمعرات کی تازہ ترین اپ ڈیٹ کے مطابق ایک دن میں 332،730 نئے کورونا وائرس انفیکشن کے ریکارڈ اضافے کے ساتھ ہندوستان میں کوویڈ 19 کے معاملات کی مجموعی تعداد 16،263،695 ہوگئی ہے جبکہ فعال معاملات 2.4 ملین سے تجاوز کر چکے ہیں۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں