181

کویت: سال کے آخر تک مزید 1840 غیرملکیوں کی نوکریاں ختم ہونے کے امکانات

 رواں سال کے آخر تک مزید غیر ملکی ملازمین کی برطرفی کے امکانات ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سول سروس کمیشن نے کویتائزیشن (صرف کویتی شہریوں کو ملازمت پر رکھنا) منصوبے کے دائرہ کار میں سرکاری وزارتوں اور ایجنسیوں میں کام کرنے والے 6127 غیر ملکی ملازمین کو نوکریوں سے برخاست کردیا جبکہ ایک اندازے کے مطابق مزید 1,840 ملازمین کی نوکریاں خطرے میں ہیں جس کے بعد اس سال کے آخر تک مجموعی طور پر برطرف ملازمین کی تعداد 7،970 ہوجائے گی۔

محکمہ ملازمت کی انچارج عائشہ المطوہ نے بتایا کہ سال 2017 میں منظور شدہ متبادل منصوبے کے پہلے تین سالوں میں 6127 تارکین وطن ملازمین کی سروس ختم کردی گئی ہے تاہم اس سال کے آخر تک مزید 1،840 ملازمین کی نوکریوں کو ختم کردیا جائے گا۔

المطوہ نے کہا کہ کویتی فوج، آئل سیکٹر اور عدلیہ کے علاوہ سی ایس سی سے وابستہ سرکاری اداروں میں نوکریاں کرنے والے کویتی شہریوں کی تعداد 308،000 ہے جبکہ دیگر شعبوں میں 71،000 غیر ملکی ملازمین بھی ہیں جن میں 31000 وزارت صحت میں کام کر رہے ہیں اور 24،000 وزارت تعلیم میں کام کر رہے ہیں جبکہ 6،000 ملازمین بطور خط و کتابت، مندوبین یا ڈرائیور کے کام کر رہے ہیں۔

وزارتوں کے لئے کام کرنے والے 71،000 غیر ملکی ملازمین میں سے 9،000 کل غیر کویتوں کا 3 فیصد ہیں اور ان کو ملازمت کے 16 مختلف گروپوں میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں انجینئر ، قانون دان ، اکاؤنٹنٹ اور سائنس فیلڈ شامل ہیں۔ ان کے خلاف متبادل کی پالیسی پہلے ہی لاگو ہوچکی ہے۔

سول سروس بیورو میں 917 کویتی شہری اور 37 غیر ملکی ملازمین ہیں وہاں صرف 4 کویتی مشیر ہیں جو سول سروس کمیشن کو درکار مطالعہ اور تحقیق کرتے ہیں۔ دو دن پہلے مطلوبہ اور ناپسندیدہ نوکریوں کی ایک فہرست کا اعلان کیا گیا تھا۔ جو لوگ اسپیشلائزیشن کے ساتھ درخواست دیتے ہیں وہ CSC سسٹم میں رجسٹرڈ ہوں گے۔ وزارت تعلیم کے فارغ التحصیل افراد پر بھی اس کا اطلاق ہوتا ہے۔

ذرائع:عرب ٹائمز ۔ کویت اردو نیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں