465

پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت نے غیرملکی کارکنان کے اقامہ کو منتقل کرنے کے لئے بڑا فیصلہ سنا دیا۔

پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت نے غیرملکی کارکنان کے اقامہ کو منتقل کرنے کے لئے بڑا فیصلہ سنا دیا۔

تفصیلات کے مطابق پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت تارکین وطن ورکرز کو تین سال کے بجائے ایک سال بعد ویزا منتقل کرنے کی اجازت دے رہا ہے۔ روزنامہ القبس کی رپورٹ کے مطابق محکمہ لیبر میں اچھے مقام کی فہرست میں اندراج شدہ آجروں (کفیل) کے ورک پرمٹ پر کارکنوں کو ایک سال کے بعد کسی دوسرے آجر (کفیل) کے پاس منتقلی کی اجازت ہے۔ کارکنان کام کے اجازت نامے کے اجراء کی تاریخ سے تین سال کے بجائے اب ایک سال بعد ہی اجازت نامہ دوسرے آجر پر منتقل کر سکتے ہیں تاہم اس عمل کے دوران موجودہ آجر (کفیل) کی منظوری حاصل کرنا ضروری شرط ہے۔

اس کے علاوہ ویزا کی منتقلی متعلقہ فہرست میں اندراج شدہ آجروں کے مابین ہوگی علاوہ ازیں پبلک اتھارٹی برائے افرادی قوت کے ذریعہ بقیہ شرائط و ضوابط پر عمل پیرا ہونا ضروری ہے۔ یاد رہے کہ یہ فیصلہ لیبر مارکیٹ پر کورونا وائرس (کوویڈ ۔19) کے منفی اثرات کی روشنی میں لیا گیا تھا۔

ڈائریکٹر جنرل احمد الموسی نے کہا کہ اس فیصلے کا مقصد آجروں کے مابین ملازمین کی نقل و حرکت کو آسان بنانا ہے اور یہ طریقہ کار حکومت کے فیصلوں کے مطابق ہے۔

ذرائع: کویت اردونیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں