184

’تراویح، تہجد اور دیگر نمازیں سڑکوں اور راؤنڈ اباؤٹس پر ادا کرنے کی اجازت نہیں ہے‘

اماراتی حکومت نے نمازیوں کو خبردار کر دیا، خلاف ورزی پر کارروائی ہو گی

رمضان المبارک کا انتظار ہر مسلمان کو رہتا ہے۔ یہ مہینہ، مغفرت، برکتوں کے حصول اور رب تعالیٰ کی خوشنودی کے لیے خاص طور پر اہمیت رکھتا ہے۔ اسی وجہ سے تمام مسلمانوں کی کوشش ہوتی ہے کہ تمام تر روزے رکھے جائیں اور عبادات بھی زیادہ سے زیادہ کی جائیں۔ تاکہ ان کا روزہ اور عبادات اللہ کے حضور قبول و منظور ہو کر گناہوں کی بخشش کا سامان بن سکیں ۔یہی وجہ ہے کہ رمضان المبارک میں امارات میں مساجد اتنی بھری ہوتی ہیں کہ باہر سڑکوں پر بھی صفیں بچھا لی جاتی ہیں۔تاہم کورونا وبا کی وجہ سے مساجد میں سماجی فاصلے کی پابندی پر عمل درآمد کروایا جا رہا ہے۔ اس مقصد کے لیے ایک ایک صف چھوڑ کر اور نمازیوں کے درمیان چھ فٹ کا فاصلہ رکھوایا جاتا ہے۔https://imasdk.googleapis.com/js/core/bridge3.455.0_en.html#goog_1085196741

اس پابندی کی وجہ سے کچھ مساجد کے احاطوں میں تراویح اور تہجد کے وقت نمازیوں کے لیے نماز پڑھنے کی جگہ کم پڑ جاتی ہے، جس کی وجہ سے وہ مسجد سے باہر سڑک پر نماز ادا کرتے ہیں۔تاہم شارجہ پولیس نے ایک وارننگ جاری کر دی ہے کہ تمام افراد اپنی عبادات کی ادائیگی مسجد کے احاطوں تک ہی محدود رکھیں۔ قیام اللیل، تہجد اور تراویح کے علاوہ دیگر نمازیں سڑکوں یا راؤنڈ اباؤٹ پرادا کرنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ اس پابندی پر عمل درآمد کے لیے خصوصی پٹرولنگ ٹیمیں مقرر کی گئی ہیں۔ جو مساجد کے باہر گشت کر کے یہ نگرانی کر رہی ہیں کہ کہیں لوگ سڑکوں یا راؤنڈ اباؤٹ پر عبادت تو نہیں کر رہے۔شارجہ پولیس کا کہنا ہے کہ سڑکوں پر نماز ادا کرنے سے سے ٹریفک بلاک ہو جاتی ہے اور حادثات کا امکان بھی بڑھ جاتا ہے۔اسی لیے 27 ویں رمضان اور 29 ویں رمضان کی رات کو پٹرولنگ ٹیموں کا گشت بڑھا دیا جائے گا تاکہ سڑکوں اور راؤنڈ اباؤٹس پر نماز پڑھنے سے روکا جا سکے، اور اس سے ٹریفک کی روانی متاثر نہ ہو۔ نمازیوں میں سماجی فاصلے کی پابندی بھی کی بھی نگرانی کی جائے گی۔

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں