153

بحیرہ عرب میں بننے والے طاقتور ترین سمندری طوفان کا رخ بھارت کی جانب مڑ گیا

بھارتی ریاست گجرات اور کیرالہ میں تباہی، دونوں ریاستوں میں ریڈ الرٹ جاری کر دیا گیا، بھارتی میڈیا

 بحیرہ عرب میں بننے والے طاقتور ترین سمندری طوفان کا رخ بھارت کی جانب مڑ گیا، بھارتی ریاست گجرات اور کیرالہ میں تباہی، دونوں ریاستوں میں ریڈ الرٹ جاری کر دیا گیا- تفصیلات کے مطابق بحیرہ عرب کے جنوب مشرق میں بننے والے سمندری طوفان ’ٹاک ٹائی‘ نے بھارت میں اثر دکھانا شروع کردیا۔ طوفان کا رخ گجرات کی جانب ہوگیا ہے جس کے بعد بھارتی ریاست کیرالہ میں تیز ہوائیں اور طوفانی بارشیں شروع ہوگئیں۔تیز ہواؤں کے باعث کئی مکانات کی چھتیں گر گئیں، پانچ اضلاع میں ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا۔ بھارتی محکمہ موسمیات نے ریاست گجرات اور قریبی علاقوں کیلئےسائیکلون الرٹ جاری کردیا۔ سائیکلون بھارتی گجرات عبور کرتا ہے تو ٹھٹھہ، بدین، میر پور خاص، عمر کوٹ اور سانگھڑ ڈسٹرکٹ پر اس کے اثرات مرتب ہوں گے۔

ڈائریکٹر محکمہ موسمیات کا کہنا تھا کہ طوفان کے باعث ٹھٹھہ، بدین، میر پور خاص، عمر کوٹ، تھر پارکر اور سانگھڑ میں اچھی خاصی بارشیں ہوں گی، ٹھٹھہ اور دیگر اضلاع میں طوفانی بارشیں بھی ہو سکتی ہیں۔سائیکلون 17 سے 20 مئی تک ان اضلاع میں اپنے اثرات پیدا کرے گا، طوفان کراچی کا غربی علاقہ پار کرتا ہے تو کراچی، حب، لسبیبلہ، حیدر آباد، جامشورو میں 18 سے 20 مئی تک بارشیں ہوں گی۔ ڈائریکٹر محکمہ موسمیات نے مزید کہا کہ طوفان کے باعث اگر ہوا کی رفتار 22 سے 27 ناٹیکل میل ہوتی ہے تو یہ مٹی کا طوفان ہو گا۔ بریفنگ میں انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ہوا کی رفتار 28 سے 33 ناٹیکل میل ہوتی ہے تو اس سے درختوں کو نقصان نہیں ہو گا، البتہ ہوا کی رفتار 34 سے 47 ناٹیکل میل ہوتی ہے تو اس سے گھروں کی چھتوں اور کھڑی فصلوں کو نقصان ہونے کا خدشہ ہے۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت اس اجلاس میں سندھ حکومت کے ترجمان، مشیرِ قانون، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب، چیف سیکریٹری ممتاز شاہ، کمشنر کراچی نوید احمد شیخ، ڈی جی پی ڈی ایم اے سلمان شاہ و دیگر نے بھی شرکت کی۔ خیال رہے کہ پاکستان کے ساحل سے قریب بحر ہند میں ایک سمندری طوفان شدت اختیار کر رہا ہے۔ اس سمندری طوفان کے نتیجے میں بھارتی ریاست گجرات کے ساحلی علاقوں اور پاکستانی سمندر کے قریب مشرق کی جانب ساحلی علاقوں کو خطرہ ہو سکتا ہے۔اگر یہ سمندری طوفان شدت پکڑ گیا تو یہ پچھلی دو دہائیوں کے دوران پاک بھارت ساحلی پٹی سے ٹکرانے والا طاقت ور ترین طوفان ہو گا تاہم ابھی تک کے اندازوں کے مطابق سمندری طوفان آبادی والے ساحلی علاقوں سے دور رہے گا لیکن مہاراشٹرا کا ساحلی شہر ممبئی اس سے متاثر ہو سکتا ہے۔

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں