193

سرعام لڑکیوں کو ہراساں کرنے والے آوارہ ٹک ٹاکر کو گرفتار کر لیا گیا

پولیس نے دھوکہ سے راہگیر خواتین کی ویڈیو بنا کر وائرل کرنے والے نوجوان کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے ڈال دیا

:پنجاب پولیس نے سرگودھا میں دھوکہ سے راہگیر خواتین کی ویڈیو بنا کر وائرل کرنے والے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان دنیا کے ایسے ممالک میں شمار ہوتا ہے جہاں خواتین کی آزادی اور انہیں حقوق کی فراہمی کی صورتحال بہتر نہیں ہے۔ مشکل و خطرناک حالات کے باوجود پاکستانی خواتین جرات و بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہر میدان میں اپنا لوہا منوانے کیلئے کوشاں رہتی ہے۔تاہم ایسی خواتین کو بھی گھر سے باہر نکلنے کے بعد قدم قدم پر شدید مشکلات خاص کر ہراسگی جیسے سنگین مسئلے کا بہت زیادہ سامنا کرنا پڑتا ہے۔ سول سوسائٹی اور خواتین کے حقوق کیلئے کام کرنے والی تنظیموں اور سیاستدانوں کی کاوشوں کے باوجود تعلیم، روزگار اور دیگر مقاصد کیلئے گھر سے باہر قدم رکھنے پر مجبور خواتین کو قدم قدم پر ہراسگی کا نشانہ بنانے کے واقعات کم ہونے کا نام نہیں لیتے۔سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو سامنے آئی ہے جو پاکستانی صارفین کو شدید غصہ دلانے کا باعث بنی۔

ویڈیو ایک آوارہ ٹک ٹاکر کی ہے جو گلی میں اپنے آوارہ دوستوں کے ساتھ کھڑے ہو کر وہاں سے گزرنے والی لڑکیوں کو ناصرف ہراساں کر رہا ہے، بلکہ اپنے اس شرمناک عمل کی ویڈیوز بنا کر انہیں ٹک ٹاک پر بھی اپ لوڈ کر رہا ہے۔ یہ ویڈیوز سامنے آنے کے بعد پاکستانی خواتین صحافیوں اور دیگر شہریوں نے شدید ردعمل دیا۔

خواتین صحافیوں اور دیگر شہریوں کی جانب سے ایسی شرمناک حرکتوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے متعلقہ حکام خاص کر پولیس سے درخواست کی گئی کہ خواتین کو سرعام ہراساں کرنے والے ایسے آوارہ افراد کیخلاف سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے۔اور اب پنجاب پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے مذکورہ ملزم کو گرفتار کر لیا ہے۔پنجاب پولیس کا کہنا ہے کہ بہنوں، بیٹیوں کو پرامن ماحول کی فراہمی ہماری اولین ذمہ داری ہے۔

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں