92

ڈاکوؤں کے آگے مزاحمت کرنے والی خاتون خانہ کو ہارٹ اٹیک

جنوبی امریکی ملک ارجنٹینا میں ڈکیتی کے دوران مزاحمت کرنے والی خاتون خانہ کو دل کا دورہ پڑ گیا، اس واقعے کی سی سی ٹی وی فوٹیج نے دیکھنے والوں کے دل دہلا دیے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق ارجنٹینا کے شہر کارڈوبا میں خاتون خانہ کو گھر میں ڈکیتی کے لیے گھسنے والے 3 ڈاکوؤں نے فرش پر لٹا کر باندھا، اس واقعے کی فوٹیج بھی سامنے آ گئی جس میں خاتون کا دہشت زدہ چہرہ دیکھا جا سکتا ہے۔

فوٹیج کے مطابق پچاس سالہ خاتون کے گھر میں تین ڈکیت 11 مئی کو گیراج کے دروازے سے گھس آئے، جو کچن میں کھلتا تھا، جب کہ اس وقت خاتون خانہ باورچی خانے کو درست کر رہی تھیں۔

خاتون نے جب مشتبہ افراد کو گھر میں گھستے دیکھا تو جلدی سے شیشے کا دروازہ بند کرنے لگیں، فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے کہ وہ اس وقت خوف سے چیخیں مار رہی تھیں اور چہرے پر دہشت طاری تھی۔

ڈاکوؤں نے زور لگا کر دروازہ کھول لیا اور اندر گھس آئے، خاتون ان کے ساتھ مقابلہ کرنے لگیں لیکن انھوں نے خاتون کو فرش پر لٹا کر ان کے ہاتھ پیر باندھ دیے، مقامی ٹی وی رپورٹ کے مطابق اس وقت خاتون کے بیٹوں نے خود کو اوپر کی منزل پر بیڈ روم میں بند کر دیا تھا اور والد کو مطلع کر دیا۔

دو ڈاکوؤں نے خاتون کو باندھا جب کہ تیسرے نے گھر میں لوٹ مار شروع کی اور ایک پلے اسٹیشن، کمپیوٹر اور نقد رقم اٹھائی، لیکن اسی دوران پولیس کو بھی اطلاع دی جا چکی تھی، جو موقع پر پہنچ گئی۔

پولیس مقابلے میں ایک ڈاکو زخمی حالت میں پکڑا گیا جب کہ باقی دو بھاگنے میں کام یاب ہو گئے، جنھیں تاحال پکڑا نہیں جا سکا، رپورٹ کے مطابق خاتون خانہ کو چند گھنٹے بعد ہارٹ اٹیک آیا جس پر انھیں اسپتال پہنچایا گیا، جہاں وہ دو دن تک زیر علاج رہیں۔

متاثرہ خاتون کے شوہر فرنانڈو ویسنٹے نے خود کو الزام دیتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ یہ سب ان کی غلطی کی وجہ سے ہوا، وہ لنچ کے بعد جب دفتر لوٹنے لگے تو دروازہ ٹھیک سے بند نہیں کیا، راستے میں انھوں نے تین میں سے دو ڈاکوؤں کو دیکھا بھی لیکن راہ گیر سمجھ کر کوئی توجہ نہیں دی۔

ذرائع: اے آر وائے نیوز اردو

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں