96

سعودیہ آنے والے غیر ملکیوں کو قرنطینہ سے رعایت کس صورت میں مل سکتی ہے؟

حکام کے مطابق کورونا سے صحت یاب افرادیا ویکسین کی خوراک لینے والے ہوٹل قرنطینہ کی شرط سے مستثنیٰ ہوں گے

سعودی حکومت نے رواں ماہ غیرملکیوں کو ڈیڑھ سال کی پابندی کے بعد سعودیہ آنے کی اجازت دے دی ہے۔ تاہم اس حوالے سے ان پر کئی شرائط عائد کی گئی ہیں جن میں ہوٹل قرنطینہ کی شرط بھی شامل ہے۔ تاہم کچھ زمروں کے غیر ملکیوں کو اس پابندی سے استثنی حاصل ہوگا۔ اُردو نیوز کی رپورٹ کے مطابق سعودی محکمہ شہری ہوابازی نے کہا ہے کہ:۔کورونا ویکسین کی ایک خوراک لینے والے مقیم غیرملکی کو سعودی عرب آمد پر ہوٹل قرنطینہ میں نہیں رکھا جائے گا اور نہ اسے آمد پر پی سی آر کا پابند بنایا جائے گا۔۔ اگر باہر سے آنے والے مقیم غیرملکی کی پوزیشن توکلنا ایپ میں ’مصاب متعاف‘ (متاثرہ صحت یاب) کی ہوگی اور اس کی صحت یابی کی تاریخ پر چھ ماہ سے زیادہ نہ گزرے ہوں گے تو نہ تو اسے ہوٹل قرنطینہ میں رکھا جائے گا اور نہ ہی مملکت آمد پر پی سی آر ٹیسٹ کا پابند بنایا جائے گا۔ ۔ کورونا ویکسین کی ایک خوراک لینے والے مقیم غیرملکی پر پی سی آر کی پابندی ہوگی اور نہ فضائی راستے سے سعودی عرب واپسی پر اسے ہوٹل قرنطینہ کا پابند بنایا جائے گا تاہم یہ ضروری ہوگی کہ توکلنا ایپ میں اس کا ریکارڈ ہو کہ وہ کورونا ویکسین کی ایک خوراک لے چکا ہے۔ ۔ مستثنیٰ زمرے سے باہر مقیم غیرملکی بیرون مملکت کورونا سے متاثر ہوکر صحت یاب ہوا ہے تو مملکت آمد پر اسے ہوٹل قرنطینہ میں رکھا جائے گا۔۔ اگر کسی شخص نے مملکت سے باہر ویکسین کی دونوں خوراکیں لی ہوں تو وہ ایئرپورٹ پہنچنے پر خود کو ’ویکسین یافتہ‘ ثابت کرسکتا ہے۔ اسے اپنا دعوی ثابت کرنے کے لیے وزارت صحت کی مقرر کردہ دستاویزات پیش کرنا ہوں گی۔ مثلا اسے یہ سرٹیفکیٹ دینا ہوگا کہ اس نے باہر رہتے ہوئے سعودی عرب میں رجسٹرڈ کوئی ایک ویکسین لی ہے۔ ایسا کرنے پر اسے ہوٹل قرنطینہ سے استثنی دیا جائے گا۔۔ سعودی سول ایوی ایشن کے مطابق المحصن (ویکسین یافتہ) وہ سعودی شہری یا مقیم غیرملکی ہے جس کی پوزیشن توکلنا ایپ میں (محصن) نظر آرہی ہو۔ اس نے کورونا ویکسین کی دونوں خوراکیں لے لی ہوں یا پہلی خوراک پر چودہ دن گزر چکے ہوں یا وہ کورونا وائرس سے صحت یاب ہوگیا ہو اور صحت یابی پر چھ ماہ سے زیادہ نہ گزرے ہوں۔جہاں تک غیرملکی اور غیرمقیم کا تعلق ہے تو ویکسین یافتہ وہی مانا جائے گا جس نے مملکت میں رجسٹرڈ کسی ویکسین کی تمام خوراکیں لے لی ہوں اور اس کے پاس اس کا ثبوت ہو۔

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں