229

سعودی عرب سے وطن واپس آنے والے پاکستانیوں کو خبردار کر دیا گیا

ایئرپورٹ پر 60 ہزار ریال سے زائد مالیت کی کرنسی، زیورات اور سامان کا اقرار نامہ جمع نہ کرانے والوں کی گرفتاریاں شروع ہو گئیں

سعودی عرب نے چند روز قبل مملکت سے باہر جانے والے سعودیوں اور تارکین وطن کو خبردار کیا ہیکہ ایئرپورٹس پر 60 ہزار ریال اور اس سے زائد مالیت کی زیورات یا کرنسی کا اقرار نامہ جمع نہ کروانے والے مسافروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ اس وارننگ کے بعد اب اس خلاف ورزی میں ملوث افراد کی گرفتاریاں شروع ہو گئی ہیں۔اُردو نیوز کے مطابق مملکت سے باہر جانے والے وہ مسافر جو ساٹھ ہزار ریال یا اس سے زائد مالیت کی کرنسی یا زیورات کو ظاہر نہیں کر رہے یا ان سے متعلق اقرار نامے کا فارم نہیں بھر رہے، ان کے خلاف سخت ایکشن شروع ہو گیا ہے۔ ان مسافروں کو طیارے کی سیڑھیوں پر چڑھتے ہوئے روک کر سرکاری استغاثہ کے حوالے کیا جا رہا ہے جوانہیں فوجداری عدالت میں پیش کر کے ان کے خلاف مقدمے چلائیں گے۔سعودی قانون کے مطابق ہر مسافر مرد و خاتون پر یہ پابندی ہے کہ وہ ساٹھ ہزار ریال یا اس سے زیادہ کی رقم لے جارہا ہو یا لے جارہی ہو یا اتنی یا اس سے زیادہ مالیت کے زیورات لے جارہی یا لے جارہا ہو تو اسے کسٹم افسران کو اس حوالے سے مقررہ فارم پر کرکے پیش کرنا ضروری ہے۔اس کی پابندی نہ کرنے والے مسافروں پر منی لانڈرنگ کے جرم کا شبہ کیا جاتا ہے- یہ بڑاجرم ہے جس پر متعلقہ شخص کو حراست میں لیکر پوچھ گچھ کی جاتی ہے۔پبلک پراسیکیوشن نے ٹوئٹر پر بیا ن میں باہر جانے والے غیرملکیوں اور سعودیوں سے کہا ہے کہ ’اگر وہ ایئر پورٹ یا بندرگاہ بری سرحدی چوکی سے سفر کررہے ہوں یا باہر سے سعودی عرب آرہے ہوں تو ہر دو صورت میں ان کی ذمہ داری ہے کہ اگر ان کے پاس ساٹھ ہزار ریال یا اس سے زیادہ رقم ہو یا اتنی یا اس سے زیادہ مالیت کے زیورات ہوں تو اس کا اقرار نامہ جمع کرائیں کیونکہ اس سے زیادہ رقم لانے لے جانے پر منی لانڈرنگ یا ٹیکس یا ممکنہ فیسوں سے فرار کا شبہ ہوتا ہے۔محکمہ زکوة و ٹیکس و کسٹم کی ہدایت کے مطابق مسافروں کو چھ اشیا مقررہ حد سے زیادہ ہونے کی صورت میں اقرار نامہ پیش کرنا ضروری ہے۔ 60 ہزار ریال یا اس سے زیادہ کی رقم یا کوئی بھی کرنسی ہو۔ زیورات، قیمتی پتھر اور معدنیات۔ کاروباری مقدار میں ایسا سامان جس پر منتخب ٹیکس مقرر ہو۔ ممنوعہ اشیا۔تین ہزار ریال سے زیادہ مالیت کے تحائف اور نجی سامان اشیا کی فہرست میں شامل ہے۔ اندراج آن لائن ہوگا۔ سمارٹ فون یا سعودی کسٹم ویب سائٹس سے اقرار نامہ جمع کرایا جاسکتا ہے۔ اس کا نمبر کسٹم حکام سے حاصل کیا جاسکتا ہے۔ اقرار نامہ پیش کرتے وقت مندرجہ معلومات کے ثبوت میں دستاویز منسلک کرنا ہوگی۔

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں