264

یو اے ای جانے کے منتظر پاکستانیوں کے لیے بُری خبر آ گئی

امارات نے پاکستان سے آنے والی پروازوں پر پابندی کی مُدت میں 30 جون تک توسیع کر دی

متحدہ عرب امارا ت جانے کے منتظر پاکستانیوں کے لیے بُری خبر آ گئی ہے۔ امارات نے پاکستان سے آنے والی پروازوں پر عائد پابندی کی مُدت میں 30 جون تک کی توسیع کر دی ہے۔ جس کی وجہ سے پاکستان میں پھنسے ہزاروں اماراتی ویزہ ہولڈرز کی واپسی نہیں ہو سکے گی۔ اس فیصلے نے ہزاروں پاکستانیوں کو مایوس کر دیا ہے۔کیونکہ امارات جلد واپسی نہ ہونے سے ان کی نوکریاں خطرے میں پڑ گئی ہیں۔ جبکہ کئی پاکستانیوں کے امارات میں تعلیم کا سلسلہ بھی متاثر ہو رہا ہے۔ واضح رہے کہ 12 مئی سے پاکستان کے علاوہ بنگلہ دیش، سری لنکا اور نیپال سے آنے والی مسافر پروازوں پر بھی عائد کی گئی تھی۔جس کی وجہ ان ممالک میں کورونا کیسز بڑھنا بتائی گئی تھی۔ اماراتی حکام کی جانب سے کہا گیا تھا کہ اس پابندی کے بعد ٹرانزٹ ویزہ والے مسافروں کو بھی یو اے ای آنے کی اجازت نہیں ہو گی۔یہ پابندی پاکستان سے آنے والی مقامی ایئر لائنز کے ساتھ ساتھ تمام بین الاقوامی ایئر لائنز پر بھی لاگو ہے۔ البتہ دیگر ممالک سے پاکستان جانے والے مسافروں کو ٹرانزٹ ویزہ پر امارات رُکنے کی اجازت ہو گی۔ ان پر اس پابندی کا اطلاق نہیں ہوگا۔ کیونکہ یہ پابندی پاکستان سے آنے والے مسافروں پر عائد کی گئی ہے۔

اماراتی حکام نے واضح کیا تھا کہ پاکستان سے آنے والی کارگو فلائٹس اس پابندی سے مستثنیٰ ہوں گی۔البتہ پاکستان سے اماراتی شہریوں کو امارات واپس آنے کی اجازت ہو گی۔ اسی طرح سفارتی مشنز، سرکاری وفود، گولڈل ویزہ ہولڈرز بھی امارا ت واپس جا سکیں گے اور بزنس مین طبقہ اپنے ذاتی جہازروں پر بھی امارات پہنچ سکے گا۔ NCEMA نے واضح کیا ہے کہ پابندی سے مستثنیٰ ان تمام مسافروں کو فلائٹ سے قبل پی سی آر ٹیسٹ کروا کر نیگیٹو رپورٹ حاصل کرنا ہوگی۔ یہ ٹیسٹ رپورٹ پرواز کے وقت 48 گھنٹے سے زائد پُرانی نہ ہو، ورنہ نئی رپورٹ حاصل کرنا لازمی ہوگا۔ یو اے ای کے ایئرپورٹ پر اُترتے ہی ان مسافروں کا موقع پر پی سی آر ٹیسٹ لیا جائے گا۔ جس کے بعد انہیں 10روز قرنطینہ میں رہنا ہو گا۔ اسی دوران ان مسافروں کا چوتھے روز اور پھر آٹھویں بھی پی سی آر ٹیسٹ لیا جائے گا۔ 

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں