168

سعودیہ میں ڈکیتی کے ملزم نے پولیس کو تگنی کا ناچ نچا دیا

ملزم نے گرفتاری کے وقت پولیس کی گاڑی کو ٹکر ماری، پھر فرار ہوا، مشکل سے گرفتار کیا تو چلتی گاڑی سے کود گیا، بالآخر قابو آ ہی گیا

سعودی عرب میں ایک جرائم پیشہ نوجوان نے پولیس کو ایسا تگنی کا ناچ نچایا کہ ان کی کئی بار دوڑیں لگوا دیں۔ بالآخر اس نوجوان کو بڑی مشکل سے تھانے تک پہنچا دیا گیا ، جہاں اسے کڑی نگرانی میں رکھا گیا ہے تاکہ وہ اپنی ہوشیاری سے کام لے کر فرار ہونے کی کوشش نہ کرے۔ سعودی میڈیا کے مطابق حفر الباطن میں ایک مقامی شہری کو گرفتار کر لیا گیا ہے ۔جس چوری اور ڈکیتی کی متعدد وارداتوں میں ملوث تھا۔ مشرقی ریجن پولیس کے ترجمان نے بتایا کہ گرفتار سعودی کی عمر 35 سال کے لگ بھگ ہے۔ اس سعودی شخص نے کئی جرائم کیے تھے، جن میں پانچ گاڑیاں اور سپیئر پارٹس کی دکانوں سے 50 ہزار ریال مالیت سامان بھی شامل ہے۔ اس شخص نے آخری واردات کے دوران اسلحہ کی نوک پر لوگوں کو بھی لوٹا تھا۔

بالآخر پولیس نے اس کا سراغ لگ کر اسے گرفتار کر لیاتاہم اس گرفتاری سے پہلے اس نے پولیس کودن میں تارے دکھا دیئے۔گرفتاری سے بچنے کے لیے اس نے پہلے پولیس کی گاڑی کو ٹکر ماری اور پھر بھاگ کھڑا ہوا۔ پولیس نے تعاقب کر کے اسے اپنی گاڑی میں بٹھا لیا تاہم تھوڑی دیر بعد یہ شخص چلتی گاڑی سے کُود گیا، جس کے نتیجے میں اسے کئی چوٹیں بھی آئیں۔ مگر یہ شخص ان زخموں کی پروا کیے بغیر بھاگ گیا اور ایک گھر میں چھپ کر بیٹھ گیا۔ بالآخر پولیس فورس نے گھر کو گھیرا ڈال کر اسے گرفتار کر لیا۔ملزم کو تھانے منتقل کر دیا گیا ہے، جہاں اس سے مختلف وارداتوں کے حوالے سے تفتیش کی جا رہی ہے۔ جس کے بعد اسے سرکاری استغاثہ کے حوالے کر دیا جائے گا جو اسے عدالت میں پیش کر کے اس پر مقدمہ چلائے گی۔ واضح رہے کہ دو روز قبل سعودی عرب میں ایک نوجوان لڑکی کو اس کی کار سمیت اغوا کرنے کی کوشش کی گئی تھی۔ یہ واردات ریاض کے علاقے میں پیش آئی تاہم لڑکی نے اپنی عزت بچانے کی خاطر چلتی کار سے چھلانگ لگا دی۔پولیس نے واردات میں ملوث 2 افراد کو گرفتار کر لیا ہے جو سعودی باشندے ہیں۔ اس واقعے کی ویڈیو بھی وائرل ہوئی تھی جس میں دیکھا جا سکتا ہےکہ رات کے وقت ایک سنسان مقام پر کار کھڑی ہے۔اچانک ایک شخص ماسک پہنے وہاں سے گزرتا ہے اور اکیلی کھڑی گاڑ ی کو دیکھ کر چوری کا ارادہ بنا لیتا ہے۔ وہ پہلے دائیں بائیں دیکھ کر اچھی طرح تسلی کرتا ہے کہ کوئی اور شخص قریب موجود تو نہیں ہے۔پھر وہ گاڑی کی طرف جاتاہے اور اندر جھانک کر دیکھتا ہے تو اسے ایک لڑکی برقعے میں ملبوس نظر آتی ہے جو غالباً اس وقت سو رہی تھی۔ملزم بڑی تسلی سے ان لاک گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھ جاتا ہے اور گاڑی ریورس کر کے جونہی چلاتا ہے تو لڑکی کو پتا چل جاتا ہے کہ کوئی اجنبی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھ گیا ہے اور گاڑی چلا کر اسے کسی نامعلوم مقام کی جانب لے جانا چاہتا تھا۔اس لڑکی نے انتہائی بدحواسی میں چلتی گاڑی سے اْترنے کا فیصلہ کیا اور اپنے اس ارادے میں کامیاب ہوگئی۔اس واقعے کی اطلاع پولیس کو فوری طور پر دی گئی تھی۔ پولیس کے مطابق گاڑی چلانے والا ملزم فرار ہو گیا تھا اور اس نے اسے ایک خفیہ ٹھکانے پر چھپا دیا تھا۔ تاہم پولیس نے ملزم اور اس کے ساتھی کو گرفتار کر لیا ہے۔ دوسرے ملزم نے اس وارادت کو انجام دینے میں مرکزی ملزم کی مدد کی تھی۔ریاض پولیس کے ترجمان خالد الکریدیس نے بتایا کہ پولیس نے ملزمان کی جانب سے چوری کی گئی کار کا پتا چلا کر اسے بازیاب کروا لیا۔ جبکہ دونوں ملزمان کو چوری اور لڑکی کو اغوا کرنے کے الزامات تحت گرفتار کر لیا ہے۔ ملزمان پر مقدمہ چلانے اور مزید تفتیش کی خاطر انہیں پبلک پراسیکیوشن کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ 

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں