145

بحرین کی اپنے شہریوں کو چینی ویکسین سائنوفارما کی تیسری خوراک وصول کرنے کی ہدایات جاری

 عالمی ادارہ صحت نے سائنوفارما ویکسین کے لئے ہنگامی بنیادوں پر منظوری دے دی جبکہ بحرین شہریوں کو چینی ویکسین کی تیسری خوراک وصول کرنے کی ہدایات جاری۔

تفصیلات کے مطابق بحرینی حکام نے اپنے شہریوں جنہوں نے چینی سائنوفارما اینٹی کورونا وائرس ویکسین وصول کی ہے انفیکشن کی تعداد میں اضافے کے باعث تیسری خوراک لینے کی اپیل کی ہے جبکہ باقی خلیجی مملکتوں میں تیز ترین ویکسی نیشن مہم کا آغاز کیا جاچکا ہے۔ حکام کے مطابق ان کے پاس سائنوفارما ویکسین کی تیسری خوراک یا جرمن، امریکی فائزر ویکسین کی ایک خوراک دینے کا اختیار ہے جبکہ حکام نے پہلے ہی اس ہفتے اضافی خوراک کی فراہمی شروع کردی ہے۔ رواں ماہ عالمی ادارہ صحت نے سائنوفارما ویکسین کے لئے ہنگامی منظوری دے دی ہے جبکہ عالمی صحت ادارے کے ماہرین کا کہنا تھا کہ اس ویکسین کے لئے ابھی بھی زیادہ ڈیٹا جمع کرنے کی ضرورت ہے۔

جمہوریہ بحرین کی قومی ٹیم کے ایک رکن نے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے جمعرات کو ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ “ہم سب کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ جسم کی قوت مدافعت بڑھانے کے لئے ویکسین حاصل کریں اور تیسری ڈوز لینے کے لئے اندراج میں پہل کریں۔ ٹیم کے رکن مناف القحطانی نے دو ہفتے قبل اعلان کیا تھا کہ اضافی خوراک چینی ویکسین وصول کرنے والوں کے لئے ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ “ہماری طبی سفارش یہ ہے کہ وہ مطالعے پر مبنی فائزر ویکسین لیں۔

بحرین میں جہاں تقریبا 18 لاکھ افراد آباد ہیں اپریل کے بعد سے روزانہ انفیکشن کی شرح میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جو گذشتہ ہفتے تین ہزار سے زیادہ کیسوں تک پہنچ چکے ہیں۔ اس سے قبل بدھ کے روز تقریبا دو ہزار کیس ریکارڈ کئے گئے۔ اموات کی تعداد میں بھی نمایاں اضافہ ہوا ہے اپریل کے آغاز میں چار اموات تھیں جو گزشتہ منگل تک 29 اموات تک ریکارڈ کی گئیں جو وبا کے آغاز کے بعد سے اب تک کا سب سے بڑا ریکارڈ ہے۔

بحرین جس نے 17 مئی سے پڑوسی ملک سعودی عرب کے زائرین کے لئے اپنی سرحدیں کھول رکھی تھیں کا کہنا ہے کہ خاندانی اجتماعات اور احتیاطی تدابیر کو نظرانداز کرنے سے متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔ بحرین کلینیکل ٹرائلز کے تیسرے مرحلے کی میزبانی کے بعد بنیادی طور پر “سائنوفارما” پر انحصار کرتی ہے لیکن اس نے فائزر، پیونٹیک ، آسٹرازینیکا اور سپوتنک ویکسینوں کا بھی لائسنس لیا ہے۔ سائنوفارما ویکسین فی الحال متحدہ عرب امارات سمیت 42 ممالک میں استعمال کی جارہی ہے جس میں چینی ویکسین کے کلینیکل ٹرائلز بھی کئے گئے ہیں اور یہ اے ایف پی کے اعدادوشمار کے مطابق آسٹرزینیکا ، فائزر اور موڈرنا کے بعد چوتھے نمبر پر ہے۔

بحرین میں تیسری خوراک ابتدائی طور پر 50 سال یا اس سے زیادہ عمر کے بالغوں ، موٹاپے کے شکار افراد اور طبی عملے کو دوسری خوراک لینے کے چھ ماہ بعد دی جائے گی بشرطیکہ یہ دوسری خوراک ملنے کے ایک سال بعد باقی آبادی کے لئے بھی دستیاب ہو۔

ذرائع: کویت اردو نیوز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں