98

متحدہ عرب امارات نے 50 درہم کا نیا کرنسی نوٹ جاری کردیا

یو اے ای کے رہنماؤں نے ملک کی 50 ویں سالگرہ کی تقریبات کے حصے کے طور پر نیا کرنسی نوٹ جاری کیا

متحدہ عرب امارات کے رہنماؤں نے ملک کی 50 ویں سالگرہ کی تقریبات کے حصے کے طور پر 50 درہم کا نیا نوٹ جاری کردیا۔ امارات کی سرکاری نیوز ایجنسی کے مطابق متحدہ عرب امارات کے رہنماؤں نے ملک کی 50 سالہ سالگرہ کی یاد میں 50 درہم کے نئے نوٹ کے اجراء کی تقریب میں شرکت کی ، جہاں امارات کے حکمرانوں اور ولی عہد شہزادوں کے علاوہ متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد المکتوم اور ابوظہبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید النہیان بھی اس موقع پر موجود تھے۔بتایا گیا ہے کہ نئے نوٹ میں مرحوم شیخ زاید بن سلطان النہیان اور امارات کے پہلی نسل کے حکمرانوں کو خراج تحسین پیش کیا گیا ہے ، جس کے لیے نئے نوٹ کے اگلے حصے میں دائیں جانب مرحوم شیخ زاید کی تصویر اور بیچ میں یونین کی دستاویز پر دستخط کرنے کے بعد بانی کے والد کی یادگار تصویر ہے ، اس کے بائیں جانب امارات کے شہداء کی یادگار کی تصویر بھی ہے جب کہ بینک نوٹ کے پچھلے حصے میں شیخ زاید مرحوم کی یونین کے معاہدے پر دستخط کرنے کی تصویر شامل ہے ، اس میں اتحاد میوزیم کی تصویر بھی ہے، جس میں یونین کے قیام اور متحدہ عرب امارات کا پرچم پہلی بار بلند ہوتے دیکھا جاسکتا ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ یو اے ای کا 50 درہم کا یہ نیا نوٹ پولیمر سے بنایا جانے والا پہلا کرنسی نوٹ ہے ، اس مواد سے بنے نوٹ روایتی نوٹوں سے زیادہ پائیدار ہوتے ہیں ، اس سے ملک کے کاربن فوٹ پرنٹ کو کم کرنے میں مدد ملے گی کیوں کہ پولیمر ری سائیکل کیا جا سکتا ہے ، بینک نوٹ میں بنفشی کے مختلف شیڈز ، درمیان میں متحدہ عرب امارات کے قومی برانڈ کے فلوروسینٹ نیلے نشانات اور انٹیگلیو پرنٹنگ کی جدید تکنیکوں کا استعمال کرتے ہوئے بنائے گئے ڈرائنگ اور نوشتہ جات شامل ہیں ، مرکزی بینک نے بریل میں علامتیں شامل کی ہیں تاکہ بصارت سے محروم افراد کو نوٹ کی قیمت کی شناخت میں مدد مل سکے ، 50 درہم کے نوٹ میں جعل سازی سے نمٹنے کے لیے جدید ترین حفاظتی خصوصیات بھی ہیں۔رپورٹ کے مطابق نوٹ کے اجراء کی تقریب کے دوران سپریم کونسل کے اراکین فجیرہ کے حکمران شیخ حمد بن محمد الشرقی، ام القوین کے حکمران شیخ سعود بن راشد المعلا ، راس الخیمہ کے حکمران شیخ سعود بن صقر القاسمی، ولی عہد اور شارجہ کے نائب حکمران شیخ سلطان بن محمد بن سلطان القاسمی اور عجمان کے ولی عہد شیخ عمار بن حمید النعیمی نے بھی شرکت کی۔

ذرائع: اردو پوائنٹ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں